سعودی عرب میں خواتین کی آزادی کے مزید اسباب پیدا ہونے لگے

شیخ عبداللہ المطلق کا کہنا ہے کہ خواتین مناسب لباس زیب تن کریں تو انہیں عبایہ پہننے کی ضرورت نہیں،ان کے لیے ایسا لباس زیب تن کرلینا کافی ہے جو مناسب اور اسلامی اصولوں کے مطابق ہو۔ خیال رہے کہ سعودی عرب میں اس وقت قانون کے مطابق عوامی مقامات پر خواتین کے لیے عبایہ پہننا لازمی ہے۔ سعودی عالم کا بیان ایک ایسے وقت میں آیا ہے جب سعودی عرب میں خواتین سے متعلق قوانین میں نرمی کا سلسلہ جاری ہے۔عبداللہ المطلق نے مزید کہا کہ مسلم دنیا کی 90 فیصد سے زائد خواتین عبایہ نہیں پہنتیں لہٰذا ہمیں خواتین پر عبایہ پہنے کے لیے زبردستی نہیں کرنی چاہیے۔سعودی عالم کے اس بیان پر سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر ملا جلا رد عمل دیکھنے میں آرہا ہے، بعض لوگوں نے عبداللہ المطلق کی باتوں سے اتفاق کیا ہے جبکہ بعض لوگوں نے ان کی مخالفت کی ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: