مالدیپ کے سیاسی بحران میں نیا موڑ،سابق صدر نے بھارت سے مدد مانگ لی

مالدیپ: سپریم کورٹ نے فیصلے میں کہا کہ حکم نامے کی منسوخی صدر کے تحفظات کے پیش نظر کی گئی ہےجبکہ مالدیپ بحران حل کے لئے سابق صدر محمد نشید نے بھارت سے مدد مانگ لی اور کہا کہ بھارت ایک مندوب بھیجے جسے فوج کی حمایت حاصل ہو۔ محمد نشید نےاپنے ٹویٹرپیغام میں امریکا سے بھی مطالبہ کیا کہ وہ مالدیپ کی موجودہ حکومت سے قطع تعلق کرلے اور اس کے ساتھ کسی قسم کا کوئی مالیتی لین دین نہ کرے۔ سابق صدر محمد نشید اس وقت سری لنکا میں جلاوطنی کی زندگی گزار رہے ہیں اوران کا کہنا تھا کہ حکومت کی جانب سے عدلیہ کے احکامات کوماننےسےانکاربغاوت کے مترادف ہے۔انھوں نے صدر عبداللہ یامین اورحکومت سے فوری مستفعی ہونے کا مطالبہ کرتے ہوئے سیکیورٹی فورسز پر زور دیا کہ وہ آئین کی پاسداری کریں۔

 

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: