6ماہ سے خاموش ٹرمپ انتظامیہ نے اپنے عزائم ظاہر کردئیے

ماہ سے خاموش ٹرمپ انتظامیہ نے اپنے عزائم ظاہر کرتے ہوئے  پاکستان کو دی جانے والی امداد پر نظرثانی کااعلان کردیا ہے،،،ریپبلکن رکن ٹیڈ پو کہتے ہیں پاکستان امریکی امداد کو افغانی طالبان تک پہنچاتا ہے ،،،پاکستان کو اب ایک پیسہ بھی نہیں ملنا چاہیے

واشنگٹن: امریکی سیکرٹری آف اسٹیٹ ریکس ٹلرسن نے اعلان کیا ہے کہ امریکا پاکستان کو دی جانے والی امداد کا بین الایجنسی جائزہ لے گا۔

یہ ریمارکس رواں ہفتے امریکی ایوان کی خارجہ امور کمیٹی کی بجٹ سنوائی کے دوران سامنے آئے جس سے ٹرمپ انتظامیہ کے پاکستان کے حوالے سے خیالات منظر عام پر آگئے۔واضح رہے کہ ٹرمپ انتظامیہ 6 ماہ قبل اقتدار میں آنے کے بعد سے اب تک پاک-امریکا تعلقات کے حوالے سے خاموش رہی ہے۔امریکی سیکریٹری اسٹیٹ کے اعلان اور امریکی قانون سازوں کے تبصروں کے بعد امریکی ذرائع ابلاغ میں یہ خیال کیا جارہا ہے کہ پاکستان کی امداد پر نظر ثانی کرنے سے کم ہوتی امریکی امداد مزید کم ہوجائے گی۔ریپبلکن رکن ٹیڈ پو نے اس موقع پر کہا کہ پاکستان امریکا کے ساتھ کھیل رہا ہے، امریکا پاکستان کو پیسہ دیتا ہے اور وہ پیسہ آخر میں افغانستان میں موجود طالبان تک پہنچتا ہے جو امریکیوں کو نقصان پہنچاتے ہیں، ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کو اب امریکا کا ایک بھی پیسہ نہیں ملنا چاہیے۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ ’پاکستان کو دہشت گردی کا کفیل ملک قرار دے دینا چاہیے اور اسے اہم غیر نیٹو اتحادی کے درجہ سے بھی ہٹا دینا چاہیے‘۔

.

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.